اقبال میدان کے بورڈ کوجمعیة علماءاوردیگرتنظیموں نے دوبارہ کیانصب

بھوپال :7دسمبر(نیانظریہ بیورو)مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال کی شناخت سمجھے جانے والے ، اقبال میدان سے محبوب شاعر علامہ اقبال کے نام کو الگ کرنے کی ذہنیت رکھنے والوں کی پول ایک تصویر نے کھول کررکھ دی۔ کارپوریشن کونسل ، جس نے پہلے بورڈ کو ہٹانے سے لاعلمی کا اظہار کیا تھا اور بعد میں مرمت کے نام پر بورڈ کو ہٹاناقبول کیاتھا، نے بورڈ کو کچرے کے ڈھیرمیں پھینک دیاتھا۔ میونسپل کارپوریشن کی اس بدنیتی پر تنقید کے بعد لوگوں میں بھی اس برتاو ¿سے غصہ بڑھ رہا تھا۔ اب شہر کے کچھ اداروں نے اقبال کے نام کو دوبارہ قائم کرنے کے لئے پہل کی ۔علامہ اقبال کے نام سے منسوب اقبال میدان میں دوبارہ اسی مقام پراس بورڈ کونصب کردیاگیاہے۔بورڈکو جمعیة علماءمدھیہ پردیش کے کارکنان اوردیگرمعززافراد کی موجودگی میں لگایاگیا۔غورطلب ہے کہ کچھ دن پہلے ہی بورڈ کے اچانک غائب ہونے کی بات سامنے آئی تھی جو اقبال میدان میں گزشتہ کئی سالوں سے موجود تھا۔ اقبال میدان کے دونوں سروں پرلگے بورڈ پر اردو اور ہندی میں اقبال میدان کا نام تحریر تھا۔
کچرے کے ڈھیرمیں ملابورڈ:
بورڈ کو میدان سے ہٹانے سے متعلق ، کارپوریشن کے عہدیداران اور ملازمین کہتے رہے کہ انہیں اس بارے میں کوئی معلومات نہیں ہے اور نہ ہی انہوں نے یہ بورڈ ہٹایا ہے۔ تاہم ، بعد میں کارپوریشن کمشنر بی وجئے دتہ نے قبول کیا کہ میونسپل کارپوریشن نے بورڈ کی مرمت کے لئے ہٹا یا ہے۔ انہوں نے کہا تھا کہ جلد ہی بورڈ کومزیدخوبصورت بناکر اقبال میدان پر لگادیا جائے گا۔10 دن گزرنے کے بعد بھی کارپوریشن کے ذریعہ بورڈ نہیں لگایا گیا ، لیکن پیر کو جمعیت علماءہند کی ریاستی اکائی کے ممبر حاجی محمد عمران ہارون ،حافظ اسماعیل بیگ ، مجاہد محمد خان نے میونسپل کارپوریشن کے ڈمپنگ یارڈ میں موجود بورڈ کی نشاندہی کی۔ کارپوریشن کے پاس فی الحال شہر سے لائے گئے فضلہ کے درمیان موجود اقبال میدان کے بورڈ کے تعلق سے کوئی مناسب جواب نہیں ہے۔اب بھوپال کی عوام اور جمعیة نے میونسپل کارپوریشن کے اشتراک سے اقبال گراو ¿نڈ پر ایک نیا بورڈلگا دیا ہے ، حاجی عمران نے کہا کہ کارپوریشن کے پاس اتنا بجٹ نہیں ہے کہ اس میدان کی حفاظت کرسکے، اس طرح میونسپل کارپوریشن اپنی غلطی پر پردہ ڈالنے کی کوشش میں ہے۔ لہذا آج یہ بورڈ دوبارہ نصب کردیا گیا ہے اور اقبال میدان کے تحفظ کے لئے ہر ممکن تعاون فراہم کیا جائے گا۔جمعیة علماءہند کے ریاستیپریسسکریٹری حاجی عمران ہارون نے کہا کہ اقبال کا قومی ترانہ دنیا بھر میں ہندوستان کی شناخت رکھتا ہے۔ سارے جہاں سے اچھا ہندوستان ہمارا… کہنے والے علامہ اقبال کا بھوپال سے گہرا تعلق ہے۔ ان کے بہت سے شاگرد اس شہر میں موجودرہے، بھوپال میں ان کی یادوں کوبرقراررکھنے کے لئے ، یہاں ایک سرکاری ایوارڈ کا نام دیا گیا ہے ، جبکہ اقبال کے نام پر لائبریری اور گراو ¿نڈ بھی موجود ہے۔ حاجی عمران نے کہا کہ دنیا کے محبوب شاعر کا نام اقبال میدان سے ہٹا دیا گیا تھا ، جس کی تاریخ پرانی ہے ، انہوں نے کہا کہ میونسپل کارپوریشن کے ذریعہ بورڈ کو ہٹانے کے پیچھے جو بھی ارادہ ہو، لیکن شہر کے لوگوں کے ذریعہ اس غلطی کونظراندازکرتے ہوئے پرکشش سائن بورڈ لگائے گئے ہیں۔ حاجی عمران نے کہا کہ جمعیت علماءنے اس سے قبل اقبال میدان اور اس کے معدوم ہوتے شناخت کی بربادی کو بچانے کے لئے مہم چلائی تھی ۔یہ مہم اب بھی جاری رہے گی۔ بورڈ نصب کرتے وقت محمد کلیم ایڈووکیٹ ، حافظ اسماعیل بیگ ، مجاہد محمد خان ، شمس الحسن ، فرحان بھائی ، لالو بھائی ، شعیب بھائی ، راشد علی ، یاور بھائی ، مفتی محمد رفیع ، آفتاب بھائی ، ذاکر بھائی ، ارمان بھائی ، جنید خان ، وغیرہ سمیت کثیرتعداد میں باشندگان بھوپال موجود تھے۔

فوٹوعقیل
دو ماہ کے اندر درست ہو یونیورسٹی کا کھیل میدان: عارف عقیل
انٹر یونیورسٹی خواتینکرکٹ ٹورنامنٹ میں پہنچے وزیر نے میدان کی حالت زار پر اٹھائے سوال
بھوپال:7دسمبر(نیانظریہ بیورو)
بھوپال ، نوابوں ، جھیلوں ، پہاڑیوں اور خوبصورت میدانی علاقوں کا شہر ، کھیل اور کھلاڑیوں کے ساتھ بھی پہچانا جاتا ہے۔ لیکن بدحال کھیل میدان علاقے کی شناخت کو داغدارکر رہے ہیں۔ شہر کی شناخت برقرار رکھنے کے لئے ، میدانی علاقوں کی بہتری کے لئے مہم چلائی جانی چاہئے۔ اس کے علاوہ کھیلوں اور کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کے لئے بھی کھیلوں کا مستقل اہتمام کیا جانا چاہئے۔
برو زمنگل اقلیتی بہبود وزیر عارف عقیل نے برکت اللہ یونیورسٹی کے کھیل کے میدان میں یہ بات کہی۔ وہ یہاں منعقدہ ویسٹ زون انٹرنیشنل یونیورسٹی ویمن کرکٹ ٹورنامنٹ کی اختتامی تقریب میں پہنچے تھے۔ عقیل نے بی یو کے کھیل میدان کی بدحال صورت پر تشویش کا اظہار کیا اور اس کی بہتری کے لئے کہا۔ یونیورسٹی کے عہدیداروں نے انہیں یقین دلایا کہ اگلے دو مہینوں میں اس گراو ¿نڈ کو نئی شکل دی جائے گی۔ عقیل نے مزید کہا کہ دو ماہ بعد یہاں ایک بڑا پروگرام منعقد ہوگا اور اس وقت میں اس میدان کوخوبصورت دیکھنا چاہتا ہوں۔
وزیر عقیل اپنے چارج میں ضلع سہور سے ضروری میٹنگ میں شریک ہونے کے بعد بی یو کے اسپورٹس گراو ¿نڈ پہنچے۔ یہاں پر انعام کی تقسیم کے بعد ، اسے دوسرے اہم اجلاسوں اور پروگراموں میں بھی جانا پڑا۔ لیکن گراو ¿نڈ میں ممبئی اور بی یو کی ٹیم کے مابین دلچسپ کرکٹ میچ دیکھنے کے بعد وہ خود کو کچھ دیر یہاں رہنے سے نہیں روک سکے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کھیل کی تکمیل اور سب کو انعام تقسیم کرنے کے بعد ہی میدان چھوڑیں گے۔ اس پروگرام میں بی یو کے سکریٹری بی بھارتی ، بابا سنگھ دیو ، اویناش شرما ، آر کے پانڈا ، کشن سوریہ ونشی وغیرہ بھی موجود تھے۔
میچ کے آخری مرحلے میں دلچسپ حالات کے درمیان پونے ، گوا اور ممبئی کے درمیان فرق ایک ہی اسکور کارہا۔ رن ریٹ کے فیصلے کے بعد پونے نے پہلے ، گوا کو دوسرا اور ممبئی کی ٹیم نے تیسرا مقام حاصل کیا۔ میزبان ٹیم بی یو کو چوتھی پوزیشن پرہی اکتفاکرنا پڑا۔