رمضان المبارک کا آدھاسفرمکمل،باقی میں شبِ قدرکی تلاش


بھوپال :10مئی(نیانظریہ بیورو)
ماہ رمضان المبارک کے سولہ روزے گزر چکے ہیں۔ نصف ماہ گزر جانے کے بعد باقی بچے روزوں کی گنتی بھی شروع ہوگئی ہے۔اندازہ لگایاجارہاہے کہ اب صرف 13یا14روزہ ہی بچے ہیں۔پھرعید کاچاند نظرآئے گااوررمضان المبارک کی رحمتوں وبرکتوں کے علاوہ بہت سی نعمتوں سے لوگ محروم ہوجائیں گے۔ اس دوران ، رمضان المبارک میںآخری عشرہ کی طاق راتوں میںجاگنے کا عمل (شب قدر کی تلاش)اگلے ہفتے سے شروع ہو جائے گا۔ لاک ڈاو¿ن کی صورتحال کی وجہ سے ، ان خصوصی راتوں میں بھی گھروں میں ہی عبادت کی جائے گی۔
رمضان المبارک کا مقدس مہینہ لاک ڈاو¿ن کے درمیان شروع ہوا ہے ، جس کی وجہ سے فرزندان توحید سحری ، افطار و تراویح کی نماز بھی اپنے گھروں میں ادا کررہے ہیں۔ وہیں سابقہ میں رمضان المبارک کے دنوں میں بازاروں میں ہجوم نظرآتاتھاجواس مرتبہ نہیں آتا ہے۔
شروع ہوگا طاق راتوں کاسلسلہ :
ماہ رمضان کی خصوصی عبادت اوردعاوں کاسلسلہ اسی ہفتے شروع ہوگا۔ اسلامی عقیدے کے مطابق ، ماہ رمضان کی طاق راتوں 21 ، 23 ، 25 ، 27 اور 29 میں شب قدرکی تلاش کی جاتی ہے۔
اس رایک رات میں عبادت کوثواب ہزار مہینوں کی عبادت سے بھی افضل بتایاگیاہے۔ ا ن طاق راتوں کوجاگ کرفرزندان توحید شب قدر کو حاصل کرنے کی کوشش میں پوری رات عبادت میںگزارتے ہیں۔ روایت کے حوالے سے بتایاجاتاہے کہ اسی بابرکت رات میں قرآن مجید لوح محفوظ سے آسمان دنیاپراتاراگیاتھا۔پھروہاں سے وقتاًفوقتاً اللہ کے رسول پرنازل ہوتاگیا۔
عیدسادگی سے منایاجائیگا:
رمضان المبارک کے 29 دن کی تکمیل کے بعد عید کا چاند نظر آئے گا۔ شہر قاضی سید مشتاق علی ندوی اور رویت ہلال کمیٹی چاند نظر آنے کے ساتھ عید کا اعلان کرے گی۔ شہر قاضی نے پہلے ہی کئی مرتبہ صاف طورپر یہ باور کرایا ہے کہ اس سال عید کا تہوار سادگی کے ساتھ منایا جانا چاہئے۔ معاشرتی فاصلے پر عمل کرنے کے لئے ، عیدگاہ میں نماز پڑھنے کے لئے شرائط پراترمشکل ہے۔ جس کی وجہ سے لوگ گھر وں میں ہی عید کی نماز پڑھ یں گے۔