کورونا سے شہید ہوئے ٹی آئی یشونت پال کی بیٹی فالگنی پال کی سب انسپکٹر پر ہوئی تقرری


صوبائی وزیر داخلہ نے فون پر دی مبارکباد
اُجین 09مئی (نیا نظریہ بیورو) کورونا سے لڑ کر شہید ہوئے اُجین کے نیل گنگا تھانہ انچارج ٹی آئی آنجہانی یشونت پال کی بیٹی اب خاکی وردی پہن کر صوبہ کی خدمت کریں گی ۔ مدھیہ پر
دیش کے وزیر برائے داخلہ، لوک صحت ، خاندان بہبود وزیر ڈاکٹر نروتم مشرا نے صبح یشونت پال کی بیٹی فالگنی پال سے ویڈیو کال کے ذریعے بات کی ۔ انہوں نے وزیر اعلیٰ کے ذریعے سے انوکمپا تقرری دیے جانے پر ان کو سماج اور صوبہ کی خدمت کے لئے مبارک باد بھی دی ۔ وزیر داخلہ سے بات چیت کے دوران فالگنی پال جذباتی ہو گئیں ۔ قابل ذکر ہے کہ پال کو 6 اپریل کو کو ر ونا کی تصدیق ہوئی تھی ۔ 16 دن جدوجہد کے بعد 21 اپریل کی صبح وہ شہید ہو گئے تھے ۔ وزیر جناب مشرا نے فالگنی کا حوصلہ بڑھاتے ہوئے کہا کہ جو ہو چکا ہے وہ واپس نہیں لایا جا سکتا ، لیکن ابھی انہیں سب انسپکٹر بن کر نہ صرف اپنے خاندان کی مدد کرنی ہے ، بلکہ اس صوبہ کی بھی خدمت کرنی ہے ۔
ٹی آئی پال کو کرم ویر میڈل سے نوازا جائے گا
وزیر اعلیٰ جناب شیوراج سنگھ چوہان نے ٹی آئی پال کے انتقال پر خراج تحسین عقیدت پیش کرکے کہا تھا – اس غم کے لمحہ میں پورا صوبہ ان کے خاندان کے ساتھ کھڑاہے ۔ ریاستی حکومت کی جانب سے سیکورٹی کوچ کے طور پر 50 لاکھ روپے ، بیٹی فالگنی کو پولیس انسپکٹر کے عہدے پر تقرری اور ٹی آئی پال کو بعد از مرگ کرم ویرمیڈل سے نوازا جائے گا ۔ اندور میں علاج کے دور ان
ٹی آئی پال نے 21اپریل کو آخری سانس لی تھی ۔