تبلیغی جماعت کی انسانی خدمت:


حکومت اورمیڈیا نے جن کو کورونا پھیلانے کی وجہ مانا،وہی اب جان بچانے کابنے سبب
بھوپال:5مئی( نیانظریہ بیورو)
راجدھانی بھوپال ہمیشہ سے ہی اپنی گنگا جمنی تہذیب کے لئے جانا جاتا ہے۔ جس کی مثالیں اکثرسامنے آتی رہتی ہیں۔ اسی دوران ، جن جماعت کے افراد پر کورونا پھیلانے کا الزام عائد کیا گیا تھا ، وہ اب لوگوں کی جانیں بچانے کے لئے آگے آرہے ہیں۔ غورطلب ہے کہ تبلیغی جماعت سے وابستہ 35 سے زائد ممبران نے شہر میں پلازمہ عطیہ کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔ جن میں سے 17 افراد نے چرایو اسپتال میں پلازمہ بھی عطیہ کیا ہے۔یہ تمام افراد راجدھانی کے ایک نجی اسپتال میں کورنٹائن ہیں۔ واضح رہے کہ یہ سب کورونا انفیکشن کی گرفت میں تھے ، لیکن اب وہ علاج کے بعد مکمل طور پر صحتمند ہیں۔ تاہم ، احتیاط کے طور پر ان سب کو نجی اسپتال میں قرنطینہ کردیا گیا ہے۔ ان تمام لوگوں نے پلازمہ کے عطیہ کرنے پر رضامندی دی ہے۔ رضامندی کے بعد ان تمام کو نجی گاڑیوں کے ذریعہ رات گئے چرایو اسپتال لایا گیا ، جہاں ان میں سے 17 نے اپنا پلازمہ عطیہ کردیا ہے۔دریں اثناان لوگوں کے علاوہ پولیس اہلکار بھی اس نیک مقصد میں پیچھے نہیں ہیں ، کیونکہ اس کورونا وائرس کے انفیکشن کے دوران پولیس دن رات عوام کی خدمت میں مستقل مصروف رہتی ہے۔ جس کی وجہ سے پولیس اہلکار بھی اس وبا میں متاثر ہوچکے ہیں۔ اگرچہ علاج کے بعد یہ پولیس اہلکار مکمل طور پر صحت یاب ہو کر میدان میں واپس آگئے ہیں ، لیکن اس کے باوجود یہ پولیس اہلکار انسانیت کے فرائض کی انجام دہی سے پیچھے نہیں ہٹ رہے ہیں۔ انسانیت کی مثال پیش کرتے ہوئے پیر کے روز پولیس انسپکٹر گیریش ترپاٹھی ، کانسٹیبل دھرمیندر بگھیل ، کانسٹیبل مکیش سنگھ ، کانسٹیبل صادق خان اور کانسٹیبل احسان خان سمیت 5 پولیس اہلکاروں نے چرایو اسپتال میں پلازمہ عطیہ کیا۔
وہیںاسپتال میں جہاں یہ جماعت کے افراد رکھے گئے ہیں ان کے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ جب پلازما عطیہ کرنے کا معاملہ ان تمام لوگوں کو بتایا گیا تو انہوں نے فوراً ہی اپنی رضامندی دے دی۔ وہ کافی خوش ہےں کہ اس طرح سے انہیںاچھا کام کرنے کا ایک موقع ملا ہے۔ اگرچہ پلازمہ ڈونیٹ کرنے کاعمل روزہ کھولنے کے بعدپوراکیاگیا ہے۔پلازمہ عطیہ کرنے والے کاکہنا ہے کہ یہ انسانیت کا کام ہے۔ جب اسے معلوم ہوا کہ پلازمہ عطیہ کرکے کسی کی جان بچائی جاسکتی ہے تو اس نے فوراً ہی اس پر رضامندی دیدی ، کیوں کہ اس سے بڑھ کر کوئی اور شرف نہیں ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت رمضان کا مبارک مہینہ چل رہا ہے اور ایسے وقت میں ہمیں یہنیک کام کرنے کا موقع ملا ہے۔ یہ ہماری خوش قسمتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ صحت یاب ہونے کے بعد ہم سب اپنا پلازمہ عطیہ کررہے ہیں۔معلوم ہوکہ مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں لوگوں کی جانیں بچانے کے لئے جماعت کے ساتھیوں نے اپنا پلازمہ عطیہ کرنے کااظہارکیاتھا۔ جس کے بعد 35 سے زائد افراد نے پلازمہ عطیہ کرنے کی رضامندی دیدی ۔ جن میں سے 17 لوگوں نے چرایو اسپتال میں پلازمہ عطیہ کردیاہے،باقی افراد بھی پلازمہ عطیہ کررہے ہیں۔