کمل ناتھ کو واپسی کا یقین: کانگریس کا ضمنی انتخاب میں 20سے 22سیٹیں حاصل کرنے کا دعویٰ

کمل ناتھ کو واپسی کا یقین:
کانگریس کا ضمنی انتخاب میں 20سے 22سیٹیں حاصل کرنے کا دعویٰ
بھوپال:4مئی(نیانظریہ بیورو)
مدھیہ پردیش میں کورونا مہاماری کے دوران مدھیہ پردیش میں حکومت کا مستقبل 24سیٹوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات طے کریںگے۔ کورونا کے قہر کی وجہ سے کھل کر بھلے ہی سیاسی پارٹیاں سامنے نہیں آرہے ہوں،لیکن اندرونی تیاریاں چل رہی ہیں۔ حکمت عملی بنائی جارہی ہے۔ کانگریس ریاستی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ نے تو یہ دعویٰ کردیا ہے کہ ضمنی انتخابات میں کانگریس 20سے 22سیٹیں جیتے گی۔ دراصل سابق وزیراعلیٰ کمل ناتھ بروز اتوار ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ صحافیوں سے مخاطب ہوئے اور کئی مدعوں پر انہوں نے جواب دیا۔ اس دوران ضمنی انتخابات کو لے کر کمل ناتھ نے کم بیک پر کہا کہ عوام دوبارہ ہم پر یقین کرےگی اور ہماری حکومت بنائے گی۔ مدھیہ پردیش میں اسمبلی کے 24سیٹوں پرانتخابات ہونا ہے۔ انتخابات میں کانگریس کو 20سے 22سیٹیں ملے گی۔ انتخابات میں یہ واضح ہوجائے گا کہ ریاست کی عوام کیا چاہتی ہے۔
دلچسپ ہونگے ضمنی انتخابات:
ضمنی انتخابات کو لے کر سیا سی پارٹیاں تیاریوں میں مصروف ہےں۔ کانگریس جہاں ایک مرتبہ پھر واپسی کی امید جگائی ہوئی ہے۔ وہیں بی جے پی اپنی تمام سیٹیں جیتنے کے یقین سے بھری ہوئی ہے۔ کانگریس کواقتدار سے باہر کرنے میں اہم کردار ادا کرنے والے جیوتی رادتیہ سندھیا حامی سابق ایم ایل ایز کی سیٹوں پر انتخابات دیکھنے لائق ہوگا۔ ضمنی انتخابا ت میں صاف ہوجائے گا کہ کانگریس چھوڑ کر بی جے پی میں جانے کا فیصلہ عوام کو کتنا پسند آیا۔ بی جے پی کے لئے ٹکٹ تقسیم اور مقامی لیڈران کو سادھنا بڑی چیلنج ثابت ہوگی۔ وہیں جیوتی رادتیہ سندھیا نے اپنے حامیوں کے لئے ابھی سے میدان سنبھال لیا ہے اور فون پر ہی کارکنان سے گفتگو کر رہے ہیں۔