روزانہ 70 مقدمات : لاک ڈاون کے دوران بھوپال میں تین ہزار سے زیادہ ایف آئی آر


بھوپال:4مئی(نیانظریہ بیورو)
کوروناوائرس کے پیش نظر ملک میں لاک ڈاو¿ن کا تیسرا مرحلہ شروع ہوچکاہے۔ ضلع بھوپال کو بھی ریڈ زون میں رکھا گیا ہے۔ جہاں لاک ڈاو¿ن کے تیسرے مرحلے میں کوئی رعایت نہیں دی جائے گی۔ پولیس کی طرف سے سختی کی جارہی ہے۔ لاک ڈاو¿ن کے آخری 43 دنوں میں ، پولیس نے روزانہ اوسطاً 70 ایف آئی آر درج کی ہیں ، جبکہ 24 مارچ سے اب تک بھوپال پولیس نے مجموعی طور پر 3035 ایف آئی آر درج کی ہیں۔ذرائع کے مطابق لاک ڈاو¿ن کے دوران ، ضلع بھوپال میں پولیس بہت سخت ہے۔ لاک ڈاو¿ن کے دو مراحل ختم ہوچکے ہیں اور اب تیسرا مرحلہ جاری ہے۔ بھوپال پولیس نے پچھلے 43 دنوں میں 3 ہزار سے زیادہ افراد کے خلاف کارروائی کی ہے۔ پولیس نے ڈھائی سو سے زیادہ افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی ہے جو ماسک لگائے بغیر باہر گھومتے پکڑے گئے ہیں۔
ڈرون کے ذریعے کی جارہی ہے شہر کی نگرانی:
غورطلب ہے کہ بھوپال میں ڈرون کے ذریعے نگرانی کے دوران احکامات کی خلاف ورزی کرنے والے تقریباً 110 افراد کے خلاف مقدمات درج کیے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ ایسے افراد کے خلاف بھی کارروائی کی گئی ہے جو بغیر اجازت دکان کھولنے اور واک آو¿ٹ کی اجازت کے گھر سے باہر گھومتے نظرآئے ہیں۔ ضلع بھوپال کے 32 تھانہ علاقوں میں 198 علاقوں کوحساس اعلان کیا گیا ہے ، جس میں ڈرون کیمروں کے ذریعے مستقل نگرانی کی جارہی ہے۔لاک ڈاو¿ن کا پہلا مرحلہ 24 مارچ سے 14 اپریل تک تھا۔ اس کے بعد دوسری مرتبہ لاک ڈاو¿ن میں 3 مئی تک توسیع کی گئی۔ اب پورا بھوپال 17 مئی تک مکمل طور پر لاک ڈاو¿ن کردیاگیاہے۔ اس دوران پولیس نے عوام کو بیدار کرنے کے لئے وقتاً فوقتاً گانے گائے۔ اس کے باوجود ، بہت سے لوگ کورونا جیسی وبا کو سنجیدگی سے نہیں لے رہے ہیں۔ شاید یہی وجہ ہے کہ پولیس نے صرف 43 دنوں میں 3000 سے زیادہ ایف آئی آر درج کی ہے۔