بارہمولہ میں ایل او سی پر گولہ باری، 2 فوجی اہلکار دم توڑ گئے

سری نگر، 2 مئی (یو این آئی) شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے رام پور سیکٹر میں جمعے کو زخمی ہونے والے دو فوجی اہلکار زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ایک فوجی ہسپتال میں دم توڑ گئے ہیں۔
ایک دفاعی ترجمان نے بتایا: ‘پاکستان کی طرف سے جمعے کو رام پور سیکٹر میں بلا اشتعال جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ بدقسمتی سے ہمارے دو فوجی جوان زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے۔ فوج ان کی عظیم قربانی کو سلام پیش کرتی ہے’۔
سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ایل او سی کے رام پور سیکٹر میں طرفین کے درمیان گولہ باری کے شدید تبادلے میں سرحد کے اس پار چار فوجی زخمی ہوئے جنہیں فوری طور پر قریبی فوجی ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ تاہم ان میں سے حوالدار گوکرن سنگھ اور نائیک شنکر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ بیٹھے۔
زخموں فوجی کی شناخت حوالدار نارائن سنگھ اور نائیک پردیپ بھٹ کے طور پر ظاہر کی گئی ہے جن کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔
قبل ازیں سرحدی گولہ باری کے نتیجے میں اوڑی کے چورندا نامی گائوں میں چار عام شہری زخمی ہوئے جن کی شناخت 12 سالہ شہنازہ بانو، 20 سالہ طاہرہ بانو، 4 توصیف احمد کھٹانہ اور حسینہ بی کے طور پر ہوئی ہے۔