خواتین معاہدہ ملازمین نے بال کٹوا کرکیا احتجاج

خواتین معاہدہ ملازمین نے بال کٹوا کرکیا احتجاج
(وپال :2مارچ(نیانظریہ بیورو)
راجدھانی بھوپال کے شاہجہانی پارک میں گذشتہ 84 دنوں سے معاہدہ ملازمین مظاہرے کر رہے ہیں۔ مظاہرین حکومت سے مستقل کئے جانے کا مطالبہ کر رہے ہیں ، لیکن حکومت ان پر کوئی توجہ نہیں دے رہی ہے۔ جس کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے خاتون معاہدہ لیکچرار نے سرکے بال اترواکروزیرتعلیم جیتوپٹواری کوبھیجنے کافیصلہ کیا ہے۔خواتین ملازمین کے ناراضگی نے ریاستی حکومت کے خلاف بطوراحتجاج منڈن کرایا۔معلوم ہوکہ جب خاتون لیکچرار پارک میں اپنے سرکے بال اتروارہی تھیں۔ اس وقت موجود تمام مظاہرین خصوصا خواتین کی آنکھوں میں آنسونظرآرہے تھے۔ انہوں نے حکومت پروعدے خلافی کا الزام عائد کرتے ہوئے کمل ناتھ حکومت کے خلاف نعرے بازی کی۔ خاتون مظاہرین کا کہنا ہے کہ حکومت صرف جھوٹ بول رہی ہے۔ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی تعلیم جو کچھ کہہ رہے ہیں وہ سراسر غلط ہے۔ لکچرار نے کہا کہ جیتو پٹواری کہتے ہیں کہ کسی کو بھی برطرف نہیں کیا جائے گا ، لیکن ہمیں برطرف کردیا گیا ہے۔ جو بھی یہاں بیٹھا ہے اسے ابھی شامل کیاجانا چاہئے۔ اگرحکومت کے ذریعہ ایساہوتا ہے تو ہم ابھی مظاہرہ ختم کردیں گے۔مظاہرین نے مزیدکہا کہ وزیر اعلی تعلیم کہاں ہےں، جویہ کہتے ہیں کہ کسی بھی معاہدہ لیکچرار کو نہیں ہٹایا جائے گا۔ لیکن ہمارا کہنا ہے کہ ہمیںہٹانے کا حکم جاری کیا گیا ہے ، جو بہت سے معاہدہ لیکچرار کو اس کے لیٹر موصول ہوئے ہےں۔