محکمہ فوڈ نے ہول سیل دکان داروں پر ما رے چھاپہ


ریٹیل میںسامان کر رہے تھے فروخت
دو دکانوں کے لائسنس ہوئے منسوخ
اُجین29اپریل (نیا نظریہ بیورو) محکمہ ضلع فوڈ کے عہدیداروں نے صبح کے وقت دولت گنج ہول سیل گروسری مارکیٹ میں چھاپے ما رے اس سے یہاں تاجروں میں ہلچل مچ گئی ۔ جو ہول سیل دکان دار ریٹیل گروسری کا سامان فروخت کررہے تھے ایسے دکان دارو ں نے یا تو دکانوں کے شٹر بند کردیئے اور تالے ڈال دیئے یا پھر خریداروں کو وہاں سے بھگا دیا ۔کچھ تاجر ایسوسی ایشن کے عہدیدار بھی اس کارروائی کے درمیان صفائی پیش کرنے آئے تھے ، لیکن محکمہ فوڈ کے عہدیداروں اور ملازمین نے قواعد کا حوالہ دیتے ہوئے انہیں چلتا کر دیا ۔ محکمہ خوراک کی جانب سے دو دکانوں کے لائسنس منسوخی کے ساتھ ہی ، دو درجن سے زیادہ ایسے لوگوں پر کارروائی کی جنہوں نے گلے میں پاس اور یو ایم سی جیکٹ پہن کر سامان خریدنے آئے تھے ۔کورونا انفیکشن کی وجہ سے شہر میں لاک ڈا¶ن و کرفیو نافذ ہے۔ اس کے تحت ضلع انتظامیہ نے ان شرائط و ضوابط کے ساتھ ساتھ اشیائے خوردو نوش کی فروخت میں بھی مستثنیٰ قرار دیا ہے جس کے تحت ہول سیل کے تاجروں کو شہر کے ریٹیل گروسری اسٹوروں کو آن لائن آرڈر لینے ہوں گے ۔ ہول سیل گروسری دولت گنج میں کسی بھی تاجر کو ریٹیل سامان فروخت کرنے کی اجازت نہیں ہے ، لیکن علاقے کے تاجر بھی قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے گروسری سامان فروخت کررہے ہیں۔اسسٹنٹ فوڈ آفیسر شیلیش گپتا نے بتایا کہ پچھلے کچھ دنوں سے یہ شکایتیں مسلسل موصول ہو رہی تھیں کہ ہول سیل گروسری کے تاجر لاک ڈا¶ن قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دولت گنج تھوک گروسری مارکیٹ میں ریٹیل سامان فروخت کررہے ہیں ، جعلی پاسز پہنے ہوئے بہت سے لوگ اور یو ایم سی کی جیکٹس پہنے ہوئے کثیر تعداد میں لوگ جمع ہیں۔ اس وجہ سے صبح کے وقت کارروائی شروع کردی گئی۔یہاں واقع دیپ ٹریڈرز اور ایچ بی ٹریڈرز کےخلاف لاک ڈاون کی خلاف ورزی کرنے کے سبب ان کے لائسنس منسوخ کردیئے گئے ہیں اور دیگر ہول سیل دکان داروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ یہ سامان شہر کے ریٹیل گروسری تاجروں کو پہنچائیں ، نہ کہ گروسری سامان اپنی دکان سے فروخت کریں۔
دو پہیا گاڑیوں پر لگایا پاس اور سامان خریدنے پہنچ گئے
جب محکمہ خوراک کی ٹیم کے ذریعہ دولت گنج تھوک گروسری مارکیٹ پر کارروائی ہورہی تھی ، اس وقت بہت سے لوگ دو پہیاپر سوار تھے جو اپنی گاڑیوں پر جعلی پاس لگائے ہوئے تھے
۔ جب ان سے پوچھ گچھ کی گئی تو وہ صحیح طور پر کچھ بھی جواب نہیں دے سکے
۔اس پر ان کو گھر واپس کیا گیا اور دوبارہ ایسی حرکت نہ کرنے کی ہدایت بھی دی گئی ۔ کچھ لوگ یو ایم سی کی جیکٹس پہن کر سامان خریدنے آئے تھے ان کی جیکٹس کو ضبط کر انہیں گھر جانے کو کہا گیا ۔ کوروناانفیکشن سے بچانے کے لیے لاک ڈا¶ن ، کرفیوکے دورا ن اصولوں کے مطابق ضروری سامان فروخت کرنے کی رعایت دی گئی ہے ، لیکن کچھ لوگ منافع کے چکر میں قوانین کی خلاف ورزی کر رہے ہیں۔ اسسٹنٹ فوڈ افسر شیلیش گپتا کے مطابق اس کی مسلسل شکایات ملنے کے بعد ہی دولت گنج ہول سیل گروسری مارکیٹ میں کارروائی کی جا رہی ہے ، جبکہ کارروائی کے دوران وی ایچ پی کے ایک لیڈر یہاں پہنچے اور کھانے کی ترسیل پاس ضبط کرنے پر ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے افسران کو سماج کا دشمن تک کہہ ڈالا جبکہ کچھ تاجر بھی اس کارروائی کے خلاف یہاں آئے تھے ، حالانکہ محکمہ فوڈ کی ٹیم میں دو درجن سے زائد معاون موجود تھے۔ محکمہ نے فرضی پاس والوں کے ساتھ دو دکانوں پر کارروائی کی ، وہیں پہلے سے اطلاع ملنے کی وجہ سے قوانین کی خلاف ورزی کرنے والا ایک گروسری اسٹور آپریٹر شٹر کا تالا لگا کر مارکیٹ سے بھاگ گیا۔