پولیس نے بلاوجہ گھروں سے باہر گھومنے والوں کو سکھایا سبق


لوگوں سے کرائی اٹھک بیٹھک
اُجین27 اپریل(نیا نظریہ بیورو) جب کورونا انفیکشن کی وجہ سے لاک ڈا¶ن کا اعلان کیا گیا تو عوام اس کے معنی نہیں سمجھے۔لوگ ضروری کام کے لئے گھروں کے باہر گھومتے رہے اور مارکیٹ میں بھیڑ بدستور برقرار رہی۔اس کے بعد کلکٹر کو لاک ڈا¶ن کے ساتھ شہر میں کرفیو نافذ کرنا پڑا۔اس کے تحت صرف ضروری سامان کی دکانیں کھلنے اور لوگوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایت دی کی گئی تھی۔مگر کچھ لوگ پھر بھی گھروں میں رہنے کو راضی نہیں ہوئے تو پولیس کو سختی اختیار کرنی پڑی ۔ اس وقت شہر کی صورتحال یہ ہے کہ اب زیادہ تر لوگ خود ہی لاک ڈا¶ن کی پیروی کر رہے ہیں اور پولیس کو زیادہ پریشانی نہیں ہو رہی ہے۔ تاہم ، کچھ جگہوں پر ، قواعد کی خلاف ورزی کرنے والوں کو سزا دی جارہی ہے۔ابھی تک ، جہاں پولیس کے علاوہ ، کیو آر ایف ، ایس ٹی ایف کے اہلکار شہر کے مختلف چوراہوں پر کھڑے تھے اور لاک ڈا¶ن کی خلاف ورزی کرنے والوں کی سخت خلاف ورزی کررہے تھے۔یہاں تک کہ پولیس گرفتاری پارٹی جگہ جگہ سے لوگوں کو گرفتار کررہی تھی اور انہیں مادھوکالج کی عارضی جیل میں رکھا گیا تھا۔ لیکن پچھلے تین دن سے ، لگتا ہے کہ شہر میں ماحول بدل گیا ہے۔پولیس اہلکار چوراہوں اور چیک پوسٹوں پر کھڑے ہیں ، لیکن جان بوجھ کر لاک ڈا¶ن کی خلاف ورزی کرنے والے افراد پر ہی سختی کی جارہی ہے۔ پولیس لو گوں کو لاک ڈاﺅن کی خلاف ورزی کرنے پر اٹھک بیٹھک لگوا رہی ہے ۔اس کے بعد انہیں گھر جانے کو کہہ رہی ہے ۔