لوگوں کی جان بچانے کی خاطر ہر دن خطروں سے کھیل رہے ہیں کیپٹن ماجد اور پائلٹ

کوشش کوسلام :


بھوپال۔20 اپرےل (نےا نظرےہ بےورو) جس کوروانا وائرس کے نزدےک آجانے ےا اس کے پاس سے گذر جانے کے خےال سے دنےا کانپ اٹھتی ہے، قہر کی اس بوری مےں پورے دن ، صبح سے شام تک اپنے ساتھ لے کر ڈھونے کی ہمت بھی کوئی رکھتا ہے ۔ پوری رےاست سے لئے گئے سےمپل کو دہلی تک لے کر جانا اور ان سے نکلے نتےجوں کا گٹھری لے کر لوٹنا ، ان کی ڈےوٹی مےں شامل ہے ۔ رےاست صحت مند رہے اور ےہاں سے جانے والے سےمپل نےگےٹےو رپورٹ کی شکل مےں واپس آئےں، کی دعا کرتے ہوئے ےہ پائلٹ جوڑی اپنی صحت کے لئے تو احتےاط برت ہی رہی ہے ، ساتھ ہی ےہ کوشش بھی کرتے نظر آرہے ہےں کہ ان کی وجہ سے کسی اپنے کو کوئی پرےشانی نہ اٹھانی پڑے ۔ قرےب اےک مہےنے کا پورا سفر کرچکے کورونا وائرس نے رےاست مےں بھی کہرام مچا رکھا ہے۔ ہر دن بڑھتے انفکےشن اور تےز ہوتی مشتبہ افراد کی تعداد کی وجہ سے رےاست سے سےمپلوں کی کھےپ نکل رہی ہے ۔ راجدھانی بھوپال سمےت پوری رےاست مےں جانچ لےب نہےں ہونے کا نتےجہ ےہ ہے کہ ان سےمپلوں کو ہر روز دہلی تک کا سفر کرنے کی مجبوری بنی ہوئی ہے ۔ ہر روز بھوپال ، اندور، اوجےن ، جبلپور سمےت پوری رےاست سے نکلنے والی سےمپلوں کی کھےپ دہلی کے لئے نکلتی ہے اور شام کو رپورٹ کے طور پر سمٹ کر واپس آتی ہے ۔
کےپٹن ماجد کا ساتھ دے رہے ہےں وشواس
روزانہ رےاست کے سےمپل لے کر دہلی کی پرواز بھرنے کا ذمہ کےپٹن ماجد اختر پر ہے ۔ ان کے ساتھ روزانہ ساتھی پائلٹ وشواس رائے بھی ہوتے ہےں ۔ ماجد اور وشواس اپنے احتےاط کے ساتھ اس بات کا خےال بھی رکھتے ہےں کہ سےمپل وقت پر دہلی پہنچ جائےں اور وقت پر ان کی رپورٹ واپس بھوپال لائی جاسکے ۔اپنی ڈےوٹی وقت مےں انہوں نے خود ہی اضافہ کر اس نازک صورتحال مےں اپنی حصہ داری طے کر لی ہے ۔
گھرکنبہ سے اختےار کر رکھا ہے فاصلہ
پوری دنےا مےں پھےلے کورونا وائرس کے خطرے اور پورے دن سےمپلوں کے ساتھ سفر کی وجہ سے کےپٹن ماجد اور پائلٹ وشواس نے اپنے خاندان کی حفاظت کی فکر بھی لے رکھی ہے۔ اس ڈےوٹی مےں مصروف ہونے کے بعد سے وہ مسلسل خاندان سے دور رہ رہے ہےں ۔ دہلی اور بھوپال مےں بھی اسٹے کرنے کے دوران وہ گھر سے دور ہی رہ کر الگ الگ ٹھکانوں پر آرام کررہے ہےں ۔ حفاظتی کوچ کے طور پر پی پی ای کٹ ، ماسک، گلفز، سےنٹےائزر وغےرہ کا استعمال کررہے ہےں ۔ ماجد اور وشواس کہتے ہےں کہ اس مشکل وقت مےں ہمارا پہلا فرض اپنے شہر، صوبے اور ملک کی صحت کا خےال رکھنا ہے ۔ اےشور نے خدمت کا ےہ موقع دےا ہے ، سرکار نے ہم پر بھروسہ کےا ہے ، ہم کسی کے بھی بھروسے کو ٹوٹنے نہےں دےں گے۔