صرف سرکاری نہیں بلکہ نجی ڈاکٹروں کو بھی ملے گا50 لاکھ کا سکیورٹی کور:وزیراعلیٰ


بھوپال:19اپریل(نیانظریہ بیورو)
مدھیہ پردیش سمیت پورے ملک میں کوروناانفکیشن میں اضافہ کاسلسلہ جاری ہے۔بھوپال میں کووڈ19 کے انفیکشن کی روک تھام کے لئے جنگی پیمانے پر کام جاری ہے ، اس سسٹم میں ریاست کے ڈاکٹروں کی طرف سے سب سے اہم کردار ادا کیا جارہا ہے ، جو اسپتالوں میں مریضوں کے علاج میں مسلسل مشغول رہتے ہیں ، لیکن ڈاکٹروں کے سامنے بہت ساری پریشانیوں کا پہاڑ بھی ہے ،جس کاانہیں بے خوف ہوکر سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس بات کو مدنظر رکھتے ہوئے کہ وزیراعلیٰ شیو راج سنگھ چوہان نے ڈاکٹروں کے ساتھ ریاست کی حالت کا بھی جائزہ لیا ہے۔جائزہ کے دوران وزیراعلیٰ نے نجی اسپتالوں کے ڈاکٹروں اور ہیلتھ ورکرز کوبھی 50 لاکھ روپے سکیورٹی کور دینے کا اعلان کیا ہے۔ اس کے علاوہ ، انفیکشن میں مبتلا مریض کی موت کے بعد رپورٹ آنے تک جسم کو مارکی میں نہیں رکھا جائے گا ، پرانے حکم کو وزیراعلیٰ نے منسوخ کردیا ہے ، نئے حکم کے تحت انہوں نے واضح کیا ہے کہ رپورٹ کا انتظار کئے بغیربھی آخری رسومات ادا کی جاسکتی ہیں ، لیکن اس دوران ہر ایک کو معاشرتی فاصلے پرعمل کرناہوگا۔
نجی ڈاکٹروں کوبھی ملے گا انشورنس :
نجی ڈاکٹروں کی درخواست پر جائزہ اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ شیوراج سنگھ نے کہا کہ ریاست میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی لڑائی میں براہ راست مصروف نجی ڈاکٹروں اور طبی عملے کو بھی سرکاری طبی عملے کی طرح 50 لاکھ روپے کا بیمہ کرایا جائے گا۔ ملک کے سرکاری اور نجی ڈاکٹر مضر حالات میں بہتر کام کر رہے ہیں اور مریضوں کو بہتر علاج مہیا کیا جارہا ہے۔اس کے علاوہ وزیراعلیٰ نے پرنسپل سکریٹری صحت کو ہدایت کی ہے کہ ٹیلیفون پر میڈیسن کا انتظام کرنے کے لئے ڈاکٹروں کے موبائل نمبر اور ٹیلیفون نمبر کی فہرست تیار رکھیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ڈاکٹر تیزی سے ٹیسٹ کٹس خود خرید سکیں گے۔ محکمہ صحت اس کی صداقت کی جانچ کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ کوڈ 19 کے لئے الگ الگ اسپتال بنائے جائیں گے۔