کانگریس کے 22 باغی ایم ایل ایز گھرکے رہے نہ گھاٹ کے:کانگریس


بھوپال:18اپریل(نیانظریہ بیورو)
شیوراج سنگھ چوہان وزیر اعلی کی حیثیت سے حلف برداری کے ایک ماہ کو مکمل کرنے کو ہےں ، لیکن اب تک حکومت کابینہ کے بغیر ہی چل رہی ہے ، جس کے پیچھے کانگریس نے بی جے پی میں شامل ہونے والے 22 سابق ایم ایل اےز پرشدیدطنز کیا ہے۔ کانگریس کے ترجمان اجے سنگھ نے کہا کہ 22 باغی جنہوں نے کمل ناتھ حکومت کو گرانے کی کوشش کی تھی ، انہیں بی جے پی اور جیوتی رادتیہ سندھیا کے زیر اثر نئی حکومت میں کوئی عہدہ یا ذمہ داری نہیں دی جارہی ہے۔کانگریس رہنماو¿ں نے 22 باغیوں پر طنزیہ لہجے میں کہاہے کہ وہ نہ تو گھر کے رہے اور نہ ہی گھاٹ کے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈران انہیں نہ تو وزیر بنانا چاہتے ہیں اور نہ ہی ان سے بات کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی ان رہنماو¿ں کو دودھ میں سے مکھی کی طرح باہرنکال کرپھینک دینا چاہتی ہے ، 22 باغی جنہوں نے ریاست کی منتخب حکومت کو گرانے کا کام کیا ہے۔ عوام اسے ضرور سزا دے گی۔کانگریس کاکہنا ہے کہ حکومت بنانے کے بعد بی جے پی میں22 کانگریس باغی جنہوں نے کمل ناتھ حکومت سے بغاوت کیاتھا بی جے پی نے بے دخل کیا ،بی جے پی ان سب کو دودھ میں سے مکھی کی طرح باہر پھینکنے کی تیاری کر رہی ہے۔اس لئے یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ یہ لوگ نہ توگھرکے رہے اورگھاٹ کے۔