سختی کے ساتھ ساتھ پولس رکھ رہی ہے لوگوں کی ضرورت کا بھی خیال


بھوپال:17اپریل(نیانظریہ بیورو)لاک ڈاﺅن کے دوران لمبی ڈیوٹی سے بے حال ہوچکی پولس جوان بھلے کبھی کبھی سخت رویہ اختیار کرنے پر مجبور ہوجاتے ہوں، کبھی لوگوں کو ڈانٹ ڈپٹ تو کبھی ڈنڈے ٹھپکائی کے حالات بنادیتے ہیں، لیکن حقیقت یہ بھی ہے کہ پولس جوان لوگوں کو ضروری دوائیوں سے لے کر سامان پہنچانے میں بھی کسر نہیں چھوڑ رہے ہیں۔ایک 70سالہ سینئر شہری واجد علی خان(مقبول واجد)آم والی مسجد،جہانگیر آباد کے رہنے والے ہیں۔ انہوں نے 100ڈایل کو فون کیا کہ یہاں آس پاس کوئی ہومیوپیتھی دوا کی دکان نہیں ہے اور دوا بہت ضروری ہے۔ پولس ہماری دوائیں روشن پورا چوراہا یا پھر چارپتی چوراہا بدھوارہ سے مہیا کرائے۔5سے10منٹ میں ہی 100ڈایل کی گاڑی آگئی ۔ ہیڈکانسٹبل بھرت لال سنگھ تھانہ جہانگیرآباد ، ہوم گارڈ سینک گووند ناگر، پولس کنٹرول روم کے ساتھ مقبول کے گھر آکردوا پرچی لے گئے اور آدھے گھنٹے میں پوری دوا لاکر گھر پہنچا گئے۔ مقبول واجد نے بتایا کہ 100ڈائل کا ڈرائیور اسرار علی پرائیویٹ ڈرائیور ہیں۔ لاک ڈاﺅن میں ان کا فرض انسانیت اپنے آپ میں ایک مثال ہے۔ مقبول نے تھانہ انچارج ، سی ایس پی، ایس پی،ڈی آئی جی، اے ڈی جی،ڈی جی سے درخواست کی ہے کہ ان تینوں ملازمین کی حوصلہ افزائی کے لئے انہیں نقد انعامات سے نوازےں۔