انتظامیہ ، منصفانہ رویہ اختیار کر کرے کام : ضلع کانگریس کمیٹی


اُجین15اپریل (نیا نظریہ بیورو) انتظامیہ پوری طرح سے اقتدار کے ہاتھ کی کٹھ پتلی بن چکا ہے جن کے دبا¶ میں آکر انتظامی افسر انہیں کی منشا کے مطابق فیصلہ لے رہے ہیں۔کورونا کی اس وبا سے نمٹنے کے لئے انتظامیہ کو کل جماعتی اجلاس بلانا چاہئے شہر کے سینئر لوگوں کے ساتھ مل کر اس سے نمٹنے کی منصوبہ بندی بنانی چاہئے لیکن ایسا نہیں ہو رہا ہے۔ انتظامیہ نے اقتدار کے دبا¶ میں آکر اس کو سیاسی رنگ دے دیا ہے ۔ا نتظامیہ نے منگل کو میٹنگ منعقد کی تھی جس میں انہوں نے صرف اقتدار کے لوگوں کو ہی بلایا تھا جس دبا¶ کے چلتے انتظامیہ نے تعصب کرتے ہوئے کانگریس کے ممبران اسمبلی عوامی نمائندے اور سینئر لیڈران کو درکنار کر دیا تھا۔ میٹنگ میں تمام انتظامی افسران بھی موجود تھے۔ واضح رہے کہ انتظامیہ ریاستی حکومت کی جانب سے غریبوں کو کھانے کے پیکٹ تقسیم کئے جا رہے ہیں لیکن انتظامیہ نے اقتدار کے دبا¶ میں آکر انہیں خود نہیں تقسیم کرنے کا فیصلہ لیتے ہوئے بی جے پی کے کارکنان کو اس ذمہ داری سونپی ہے اور دیگر سیاسی جماعتوں کے لوگوں کو اور عوامی نمائندوں کو اس سے مستثنیٰ رکھا گیا ہے ۔اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ انتظامیہ کس طرح سے اقتدار کے دبا¶ میں آکر کام کر رہا ہے ان کا یہ فیصلہ انتہائی قابل مذمت ہے ۔اس کا ضلع کانگریس کمیٹی پرزور سے مخالفت کرتی ہے جب کہ انتظامیہ کو اس آفت میں سبھی سیاسی پارٹیوں کے لوگوں اور عوامی نمائندوں کو سب کو ساتھ میں لے کر کام کرنا چاہئے نہ کی اس پر سیاست کرنی چاہئے اور کسی کے دبا¶ میں آکر فیصلے نہیں لینا چاہئے اگر انتظامیہ نے جلد ہی اپنا فیصلہ نہیں بدلا تو کانگریس پارٹی اس کی سخت احتجاج کرے گی اور ہم انتظامیہ کو بتانا چاہتے ہیں کہ اقتدار آتی جاتی رہتی ہے موجودہ حالات کے پیش نظربی جے پی کے دبا¶ میں کام نہ کریں اور اس کویاد رکھیں کہ کل بھی آتا ہے اور اس کے بعد پرسوں بھی آتا ہے ۔