کورونا کے سیمپل لے جا رہے ہیلی کاپٹر میں آئی تکنیکی خرابی، باغپت ہائی وے پر ایمرجنسی لینڈنگ

نئی دہلی: اتر پردیش کے باغپت میں جمعرات کی صبح ایکپریس وے پر کووڈ-19 ٹیسٹ سیمپل کی سپلائی لے کر جا رہے ہندوستانی فضائیہ (آئی اے ایف) کے چیتا ہیلی کاپٹر کی ایمرجنسی لینڈنگ کرانی پڑی۔ فضائیہ کے ترجمان ونگ کمانڈر اندرنيل نندی کے مطابق ہیلی کاپٹر اس وقت ہنڈن ہوائی اڈے سے چنڈی گڑھ کے لئے پرواز کر رہا تھا۔
ترجمان نے کہا ’’ہیلی کاپٹر كووڈ -19 کے نمونوں کو لانے کے لئے ہنڈن سے چندی گڑھ کی طرف جا رہا تھا۔ ہنڈن سے تقریباً تین بحری میل ( این ایم ) پر ہیلی کاپٹر میں اچانک تکنیکی خرابی آئی، جس کے بعد دارالحکومت کے بیرونی رنگ روڈ ہائی وے پر ہیلی کاپٹر کو محفوظ اتار لیا گیا۔
انهوں نے کہا کہ پائلٹوں نے بغیر وقت گنوائے فوری طور پر درست کارروائی کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ ہیلی کاپٹر کو ایمرجنسی حالات میں اتارنے کے دوران کسی بھی املاک کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے۔ ہیلی کاپٹر میں آئی خرابی کو ٹھیک کرنے کے لئے ریکوری طیارہ ہنڈن سے بھیجا گیا۔ ہیلی کاپٹر کو ٹھیک کرنے کے بعد اس کو فوری طور پر محفوظ طریقے سے ہنڈن واپس لایا گیا۔
اس ہیلی کاپٹر کو ڈیزائن کی وجہ سے راڈار آسانی سے پکڑ نہیں پاتا ہے۔ قریب پونے تین گھنٹے تک پرواز کرنے والا یہ اٹیک ہیلی کاپٹر دشمن پر جب حملہ کرتا ہے تو اس کی شامت آ جاتی ہے۔ اس ہیلی کاپٹر سے دہشت گردوں کے ٹریننگ کیمپ اور دشمن کے ٹینک تک تباہ کیے جا سکتے ہیں ۔ اس سے پہلے فروری میں چیتا ہیلی کاپٹر جموں میں گر کر تباہ ہو گیا تھا۔ لیکن دونوں پائلٹ ہیلی کاپٹر سے محفوظ باہر نکل آئے تھے۔ اس وقت اس ہیلی کاپٹر نے ادھم پور سے پرواز بھری تھی۔