ٹیلہ جمالپورہ علاقے میں ہندوکی میت کومسلمانوں نے دیاکندھا

کورونامیں مذہبی اتحاد:

بھوپال:15اپریل(نیانظریہ بیورو)
اس وقت ملک میں لاک ڈاو¿ن نافذ ہے۔اس دوران راجدھانی کے ٹیلاجمالپورہ علاقہ میں ایک غیرمسلم خاتون کی موت ہوگئی۔اس دوران ان کے کوئی رشتہ دارلاک ڈاو¿ن کی وجہ سے شریک نہ ہوسکے اورنہ ہی پڑوسی ان کے آخری رسوم میں پہنچے۔اس موقع پرمحلے میں رہ رہے مسلم طبقے آگے آئے اوران کوکندھادیکرشمشان گھاٹ تک پہنچایا۔جہاں ان کی آخری رسوم اداکی گئی۔اس طرح آپسی یکجہتی کی مثال پیش کرتے ہوئے مسلمانوں نے یہ ثابت کردیا کہ وہ کسی سے بیرنہیں رکھتے ،لیکن اپنی سیاسی روٹی سینکنے کے لئے کچھ مفاد پرست لوگ ہی دونوں طبقوں کے درمیان نفرت پھیلانے کاکام کرتے ہیں۔ جبکہ ایک ہی محلے میں رہنے والے تمام طبقات ایک ساتھ میل ومحبت سے رہتے ہیں۔لیکن سماج میں نفرت پھیلاکرملک کوتوڑنے والے یہ افراد مصیبت کی گھڑی میں نظرنہیں آتے۔یہ واقعہ نفرت پھیلانے والوں کے منھ پرایک زوردارطمانچہ ہے۔خاص کرلوگوں کوبھی یہ سمجھنا ہوگا کہ ان پرجب مصیبت آتی ہے توکون ان کی مددکے لئے آگے آتاہے،کیاجولوگ ان کے دلوں میں مذہبی نفرت پھیلاتے ہیں وہ ان کے کسی کام میں مددکرنے آتے ہیں۔اگریہ لوگ سمجھ لیں توشاید فرقہ وارانہ فساد کی نوبت ہی نہ آئے۔